محمد رضوان پاکستان ٹیسٹ ٹیم کے 33 ویں کپتان بن گئے

0
82

اسلام آباد۔26دسمبر :محمد رضوان قومی ٹیسٹ ٹیم کے33 ویں کپتان بن گئےجن کا تعلق خیبرپختونخوا سے ہے۔ نیوزی لینڈ میں ٹی ٹونٹی سیریز شروع ہونے سے قبل ہی پاکستان ٹیم کو بابر اعظم کی انجری کا سامنا کرنا پڑا، قیادت کے امیدوار نائب کپتان شاداب خان کی فٹنس بھی مشکوک تھی، بہرحال صحتیاب ہونے پر انھوں نے ٹی ٹونٹی ٹیم کی کمان سنبھالی، ٹیسٹ سیریز کے پہلے میچ کے لئے بھی بابر اعظم دستیاب نہیں ہیں،اب نائب کپتان محمد رضوان کو قیادت کا موقع ملا ہے،وہ پاکستان کرکٹ کی تاریخ کے 33 ویں ٹیسٹ کپتان بنے ہیں۔محمد رضوان کو یہ اعزاز نیوزی لینڈ کے خلاف مائونٹ مانگنوئی میں کھیلنے جارہے پہلے ٹیسٹ میچ میں حاصل ہوا ہے۔ وکٹ کیپر بیٹسمین کی قیادت میں خیرپختونخوا کی ٹیم نے رواں سال قومی ٹی ٹوئنٹی ٹورنامنٹ کا ٹائٹل اپنے نام کیا تھا، گذشتہ چند برس میں اس صوبے سے پاکستان ٹیم کو تسلسل کے ساتھ نیا ٹیلنٹ میسر آرہا ہے اور اب قومی ٹیسٹ ٹیم کی کپتانی کا اعزاز بھی حاصل ہوگیا ہے ۔دوسری جانب طویل فارمیٹ کے کم میچز کھیل کر قیادت سنبھالنے والے پاکستانی کرکٹرز کی فہرست میں محمد رضوان تیسرے نمبر پر آگئے ہیں۔ اے ایچ کاردار نے برصغیر پاک و ہند کی تقسیم سے قبل مشترکہ ٹیم کی جانب سے 3ٹیسٹ کھیلنے کے بعد پاکستان کی قیادت سنبھالی تھی،جاوید برکی نے 8میچ کھیلنے کے بعد یہ اعزاز حاصل کیا۔محمد رضوان نے ماؤنٹ مانگنوئی ٹیسٹ سے قبل 9میچز میں حصہ لیا تھا،ماجد خان اور شعیب ملک کو 18،18میچز کے بعد پاکستان ٹیم کی قیادت کا اہل سمجھا گیا تھا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here