نیوزی لینڈ نے ویسٹ انڈیز کے خلاف پہلی اننگز میں 6 وکٹوں کے نقصان پر 294رنز بنالیے

0
83

ویلنگٹن۔11دسمبر :ہنری نکولس کی ناقابل شکست سنچری کی بدولت نیوزی لینڈ نے ویسٹ انڈیز کے خلاف دوسرے اور آخری ٹیسٹ میچ کے پہلے روز اپنی پہلی اننگز میں 6 وکٹوں کے نقصان پر 294 رنز بنالئے، نیوزی لینڈ کی پہلی تین وکٹیں 78 کے مجموعی سکور پر گر گئی۔ اس کے بعد ہنری نکوس نے اپنی ٹیم کو سنبھالا دیا اور محتاط انداز میں بلے بازی کا مظاہرہ کرتے ہوئے نہ صرف اپنے ٹیسٹ کیریئر کی چھٹی سنچری سکور کی بلکہ ٹیم کے مجموعی سکور کو 294رنز تک پہنچا دیا۔ ہنری نکولس ناقابل شکست 117رنز کے ساتھ ناٹ آئوٹ ہیں۔ ویسٹ انڈیز کی طرف سے شینن گیبرائل نےتین ، چمارہولڈر نے دو جبکہ الزاری جوزف نے ایک کھلاڑی کو آئوٹ کیا۔ جمعہ کو ویلنگٹن کے مقام پر دونوں ٹیموں کے درمیان میچ شروع ہوا تو مہمان ٹیم کے کپتان جیسن ہولڈر نے ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کا فیصلہ کیا۔ نیوزی لینڈ کی طرف سے کین ولیمسن کی غیر موجودگی میں قیادت کے فرائض سرانجام دینے والے ٹام لیتھم اور ٹام بلنڈل نے اننگز کا آغاز کیا، کیوی ٹیم کی پہلی وکٹ 31کے مجموعی سکور پر گر گئی جب ٹام بلنڈل 14رنز بنانے کے بعد شینن گبرائل کی گیند کا نشانہ بنے۔ ان کے بعد قائم مقام کپتان ٹام لیتھم بھی زیادہ دیر تک وکٹ پر نہ ٹھہر سکے اور انفرادی 27رنز بناکر چمار ہولڈر کی گیند پر ڈی سلوا کے ہاتھوں کیچ آئوٹ ہوگئے۔ روز ٹیلر تیسرے آئوٹ ہونے والے کھلاڑی تھے 9رنز بناکر شینن گبرائل کی گیند پر ڈی سلوا کے ہاتھوں کیچ آئوٹ ہوئے ، یوں کیوی ٹیم کی پہلی تین وکٹیں 78کے مجموعی سکور پر گر گئیں۔ اس کے بعد ویل ینگ اور ہنری نکولس نے چوتھی وکٹ پر 70قیمتی رنز بنائے تاہم اس موقع پر ویل ینگ 43رنز بناکر شینن گبرائل کی گیند پر ہولڈر کے ہاتھوں کیچ آئوٹ ہوگئے ۔ واٹلنگ کیوی ٹیم کے پانچویں آئوٹ ہونے والے کھلاڑی تھے جو 30رنز بناکر الزاری جوزف کی گیند پرکلین بولڈ ہوگئے ۔ ڈیرل مچل 42رنز بناکر چمار ہولڈر کی گیند پر ایل بی ڈبلیو آئوٹ ہوگئے ۔ اس دوران ہنری نکولس نے اپنی سنچری مکمل کرلی ۔میچ کے پہلے روز جب کھیل ختم ہوا تو نیوزی لینڈ نے اپنی پہلی اننگز میں 6 وکٹوں کے نقصان پر 294رنز بنالیے تھے ۔ہنری نکولس 117اور کائل جیمسن ایک رن کے ساتھ ناٹ آئوٹ ہیں۔ویسٹ انڈیز کی طرف سے شینن گیبرائل نےتین ، چمارہولڈر نے دو جبکہ الزاری جوزف نے ایک کھلاڑی کو آئوٹ کیا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here